Nazim's poetry

Nazim's poetry

Monday, February 18, 2013

wo shakal tu dikha gia


 دیارِ دل کی رات میں چراغ سا جلا گیا
ملا نہیں تو کیا ہوا، وہ شکل تو دکھا گیا

جدائیوں کے زخم، درد زندگی نے بھر دیئے
اس بھی نیند آگئی، مجھے بھی چین آ گیا


وہ دوستی تو خیر اب نصیبِ دشمناں ہوئی
وہ چھوٹی چھوٹی رنجشوں کا لطف بھی چلا گیا

پکارتی ہیں فرصتیں، کہاں گئیں وہ صحبتیں
زمیں نگل گئی انہیں کہ آسمان کھا گیا

یہ صبح کی سفیدیاں، یہ دوپہر کی زردیاں
میں آئینے میں ڈھونڈتا ہوں، میں کہاں چلا گیا

No comments:

Post a Comment

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...